کیا آپ جانتے ہیں آئی سی سی کرکٹ ورلڈ کپ جیتنے والےعظیم کھلاڑی کون اور کس ملک سے تھے

ایک روزہ کرکٹ کا چار سال کے بعد آنے والا ٹورنامنٹ ورلڈ کپ ٹورنامنٹ کہلاتا ہے اس میں جیتنے والی ٹیم اگلے چار سال تک ورلڈ چمپئین کہلاتی ہے اس مضمون میں ہم آپ کو دکھائیں گے وہ عظیم کپتان جنہوں نے نہ صرف بہترین حکمت عملی سے اپنی ٹیم میں نظم و ضبط قائم کی بلکہ اپنی ذمہ دارانہ قیادت سے اپنی ٹیم کو ورلڈ چمپئین بنایا

کلیو لویڈ

انیس سو پچھتر 1975 میں پہلی مرتبہ منعقد ہونے والے ایک روزہ کرکٹ ورلڈ کپ میں پاکستان سمیت مجموعی طور پر آٹھ ٹیموں نے حصّہ لیا جس میں پاکستان ٹیم قیادت آصف اقبال نے کی تھی اس ٹورنامنٹ میں ویسٹ انڈیز کی قیادت کلیو لویڈ کررہے تھے جو بہترین آل راؤنڈر تھے اور انہوں نے اپنی صلاحیتوں کا مظاہرہ کرتے ہوۓ یکے بعد دیگرے یعنی 1979 میں بھی  اپنی ٹیم کو فتح سے ہمکنار کیا




کپل دیو

انیس سو تراسی 1983 میں ورلڈ کپ ٹرافی انڈیا نے کپل دیو کی قیادت میں جیتی

ایلن بارڈر

ان کا پورا نام ایلن رابرٹ بارڈر ہے لیکن انہیں کرکٹ کی دنیا میں اے بی کے نام سے جانا جاتا ہے جو کئی سال تک آسٹریلیا کی ٹیم کے کپتان رہے اور بلآخر انیس سو ستاسی میں آسٹریلیا کی ٹیم نے ان کی قیادت میں کرکٹ ورلڈ کپ جیتا




عمران خان

آسٹریلیا میں منعقد ہونےوالا انیس سو بانوے 1992 کا ورلڈ ٹورنامنٹ عمران خان نے ذمہ دارانہ کھیل کا مظاہرہ کرتے ہوۓ پاکستان کرکٹ ٹیم کو نہ صرف ورلڈ کپ جتوایا بلکہ اپنی بہترین قیادت سے ٹیم میں نظم وضبط پیدا کیا اور یہاں یہ بات بتانا بھی ضروری سمجھتے ہیں کرکٹ کی تاریخ میں غیرجانبدارامپائر کا لازم ہونا بھی عمران خان کی مرعون منت ہے اس سے پہلے جن ٹیموں کا میچ ہوتا تھا امپائر بھی انہی ملکوں سے ہوتے تھے

ارجنا رناتنگا

کول کیپٹن کے نام سے شہرت حاصل کرنے والے ارجنا رناتنگا نے ورلڈ کپ انیس سو چھیانوے میں آسٹریلیا کو فائنل میں ہر کر سری لنکا کو فتح دلائی قذافی اسٹیڈیم لاہورمیں فائنل میچ کا انعقاد کیا گیا تھا سری لنکن کپتان ارجنا رناتنگا نے اس وقت کی پاکستانی وزیراعظم محترمہ بینظیر بھٹو سے ٹرافی وصول کی تھی




سٹیو واف

سٹیو واف مارک واف دونوں کرکٹر اور جڑواں بھائی ہیں سٹیو واف نے انیس سو ننانوے میں آسٹریلوی کرکٹ ٹیم کو ورلڈ کپ میں فتح دلائی اور یوں آسٹریلیا کی ایک کے بعد ایک فتوحات کا سلسلہ شروع ہوا

ریکی پونٹنگ 

ریکی پونٹنگ ایک عظیم کپتان ہونے کے ساتھ ساتھ ایک عظیم بیٹسمین بھی تھے انہوں نے اپنی ٹیم کو دوہزارتین اور دوہزارسات میں ورلڈ کپ جتوایا اورآپ کو یہ بھی بتاتے چلیں کے ریکی پونٹنگ سب سے زیادہ سنچریاں بنانے میں دوسرے نمبر پر ہیں

مہندر سنگھ دھونی

ایم ایس دھونی ان کا مختصر نام ہے سترہ سال سے وکٹ کیپراوربیٹسمین کے طور پر بھارتی ٹیم کا حصہ رہے ہیں اور دو ہزار گیارہ میں فائنل میں بنگلہ دیش کو ہر کر ورلڈ کپ اپنے نام کیا




مائیکل کلارک

پورا نام مائیکل جان کلارک بیٹنگ کا جارحانہ انداز 2015 میں پیشہ وارانہ کارکردگی سے اپنے ملک آسٹریلیا کو پانچواں ورلڈ کپ جتوانے میں کامیاب ہوۓ